سلفیٹ رزِسٹنٹ سیمنٹ

آرڈنری پورٹ لینڈ سیمنٹ

فوجی سیمنٹ اپنے اچھے میعار اور ذیادہ مضبوطی کی دجہ سے دوسرے سیمنٹ کے مقابلے میں امتیازی حیثیت رکھتا ہے ۔
فوجی سیمنٹ کا فارمولا سیمنٹ کے بنیادی فارمولا کے مطابق ہے۔ اس میں ۹۵فیصد کلنکر اور 5 فیصد جپسم استعمال ہوتی ہے جو کہ فوجی سیمنٹ کو دوسرے برانڈز سے منفرد کرتی ہے۔
ذیادہ مضبوطی، جینوئن سیمنٹ فارمولا ، کم مقدار میں میگنیشیم آکسائیڈ اور اعلی میعار فوجی سیمنٹ کا طرۂ امتیاز ہے۔فوجی سیمنٹ اپنے اعلی میعار کی وجہ سے تمام قومی اور بیناالاقوامی سٹینڈرڈز کے مطابق ہے اور تمام سٹینڈرڈز کی شرائط کو نہ صرف پورا کرتا ہے بلکہ اس کا میعار سب کی شرائط سے ذیادہ اچھا ہے ۔

استعمال
فوجی آرڈنری سیمنٹ اپنے بہترین میعار اور ذیادہ مضبوطی کی دجہ سے ہر طرح کی تعمیرات کیلئے انتہائی موذوں ہے۔
فلائی اوورز اور پلوں کی تعمیر کیلئے موذوں ہے ۔
بلند عمارات کی تعمیر کیلئے موذوں ہے ۔
بڑی تعمیر ات کیلئے موذوں ہے ۔
ہر طرح کی پری کاسٹ کی تعمیر کیلئے انتہائی موذوں ہے ۔

فوجی سیمنٹ استعمال کے وقت کم مقدار میں حرارت خارج کرتا ہے ۔ جسکی وجہ سے تعمیرات حرارت خارج ہونے والے نقصانات سے محفوظ رہتی ہے۔
سیمنٹ سے نکلنے والی گرمی بھی کم ہے ۔ یہ گرمی اس وقت پیدا ہوتی ہے جب سیمنٹ کو پانی سے ملایا جاتا ہے ۔یہ گرمی جتنی کم ہو گی اتنا ہی سیمنٹ پکا ہو گا ۔

الکلی کی کم مقداروالا سیمنٹ

LA سیمنٹ میں پوٹاشیم آکسائیڈ اور سوڈیم آکسائیڈکی مقدار عام سیمنٹ کے مقابلے میں کم ہوتی ہے۔ جس کی وجہ سے یہ سیمنٹ ریت، بجری اور پانی میں موجود کیمیائی مرکبات سے کیمیائی تعامل نہیں کرتا۔ کیمیائی تعامل نہ ہونے کی وجہ سے تعمیرات میں دداڑیں پیدا ہونے کا خطرہ بہت حد تک کم ہو جاتا ہے ۔
فوجی سیمنٹ LA میں پوٹاشیم آکسائیڈ اور سوڈیم آکسائیڈ کی مقدار۶۰ء۰ سے کم ہے جو کہ تمام قومی اور بین الاقوامی معیار کے مطابق ہے۔
فوجی LA سیمنٹ میں الکلیز کی مقدار کم ہونے کے ساتھ ساتھ ایک منفرد خصوصیت یہ ہے کہ اسکی طاقت اور مضبوطی بھی ذیادہ ہے۔
کم مقدار میں کیلشیم آکسائیڈ اور سوڈیم آکسائیڈ ، ذیادہ طاقت اور کم حرارت کا اخراج فوجی LA سیمنٹ کا طرۂ امتیاز ہے۔

LA سیمنٹ کا استعمال
پلوں کی تعمیرات کیلئے انتہائی موذوں ہے
زیرِزمین تعمیرات کیلئے انتہائی موذوں ہے
پانی جمع کرنے کے ذخائر کی تعمیر کیلئے بہت موذوں ہے
نہروں ، بیراجوں اور ڈیموں کی تعمیر کیلئے انتہائی موذوں ہے
تہہ خانوں اور بنیادوں کی تعمیر کیلئے انتہائی موذوں ہے

فوجی سلفیٹ رزِسٹنٹ سیمنٹ

فوجی ایس آر سی پاکستان یورپین اور امریکن سٹینڈرڈ کی تمام معیاری ضروریات کے مطابق تیا ر کِیا جاتا ہے۔ ٹرائی کیلشیم ایلومنیٹ C3A کی مقدار ۵ء۲% سے کم ہے۔ جو کہ تمام قومی اور بین الاقوامی سٹینڈرڈ میں متعین مْقدار سے بھی کم ہے۔ اور لوہا کی مقدار ذیادہ ہوتی ہے۔
فوجی ایس آر سی سیلیکا مرکبات (ریت) کی ملاوٹ کے بغیر بنایا جاتا ہے۔ اِس لیے اِس کی طاقت غیر معمولی طور پر دوسرئے برانڈ سے ذیادہ ہے۔
فوجی ایس آر سی پو ٹاشیم آکسائیڈ اور سوڈیم آکسائیڈ کی کم مقدار ہونے کی وجہ سے نقصان دہ کیمیائی مرکبات کے خلاف مضبوط اور پائیدار مدافعت فراہم کرتا ہے۔

فوجی ایس آر سی کے استعمال
۱۔ رہائشی اور کمرشل عمارات کی تعمیر کے لیئے موزوں سیمنٹ ہے۔ بیسمنٹ ، باتھ روم اور ڈی پی سی وغیرہ میں ضرور استعمال کریں۔
۲۔ عمارات ، پلازہ اور دوسری جگہ جو سیم اور تھور کی وجہ سے خراب ہو چُکی ہیں وہاں آپ فوجی SRC لگائیں۔ لگانے سے پہلے اس جگہ کو اچھی طرح کھُرچ لیں۔ کھُرچنے کے بعد اِسکو تیزاب مِلے پانی ( ۸ سے %۱۰ تیزاب کے محلول یا ٹائیلٹ صاف کرنے والا تیزاب بھی استعمال کیا جا سکتا ہے ۔ وہ بھی تقریبا ۸ سے %۱۰ تیزاب کا محلول ہوتا ہے) سے دھویں، پھِر صاف پانی سے دھو کراِس پر فوجی SRC کا پلستر کر دیں۔ وہ جگہ دوبارہ خراب نہیں ہو گی اور رنگ بار بار نہیں کروانا پڑھے گا۔
۳۔ سیمنٹ کے بلاک بھی فوجی SRC سے بنائے جا سکتے ہیں جو عام سیمنٹ کی نسبت بہت بہتر ہوں گے۔
۴۔ ڈیمز اور پانی کے چھوٹے بڑئے ذخائر کے تعمیر کے لیئے بہترین ہے۔
۵۔ نہریں اور پانی کے کھال بنانے کے لیے انتہائی موزوں ہے۔
۶۔ نکاسی آب ( سیوریج) کے پائپ بنانے کے لیے موزوں ترین ہے۔
۷۔ کیمیائی پلانٹس کی عمارتوں کی تعمیر کے لیے موزوں سیمنٹ ہے۔

ہدایات

فوجی OPC / SRC اور LACانتہائی احتیاط اور کتاب کی ہدایات کے مطابق تیار کِیے گے ہیں جو ہر قِسم کے ملاوٹ سے پاک ہیں۔
اور یہ نہ صِرف پاکستان بلکہ دُنیا کے تمام سٹینڈرڈ کے مطابق ہے خاص کر اِس کا LOI سب سے کم ہے۔ اِس لیئے استعمال کرتے وقت مندرجہ ذیل ہدایات پر عمل کیا جائے تو دونوں سیمنٹ بہترین نتائج دیں گے۔

۱۔ جب ریت اور سیمنٹ کو آپس میں مِلایا جائے تو اِس بات کا خاص خیال رکھا جائے کہ ریت اور سیمنٹ آپس میں اچھی طرح مِل گے ہیں۔ مِکس کرنے کے عمل کو ۷ مرتبہ دہرایا جائے۔
۲۔ جِس جگہ ریت اور سیمنٹ آپس میں ملائے جانے ہیں اُس جگہ کو پہلے سیمنٹ سے پلستر کریں اور جگہ اِسطرح بنے کہ سیمنٹ میں استعمال ہونے والا پانی باہر بہہ نہ جائے اور جِس جگہ مصالحہ بنایا جائے وہ جگہ CURVE ہونی چائیے اسی طرح کنکریٹ کرتے وقت بھی خیال رکھا جائے کیونکہ سیمنٹ مِلا پانی اگر ضائع ہو جائے تو سیمنٹ کے مصالحہ کی خصوصیات ٹھیک نہیں رہتی۔
۳۔ سیمنٹ سے مصالحہ یا کنکریٹ کرتے وقت مناسب پانی کا استعمال کریں کم یا زیا دہ پانی کا استعمال کرنے سے آپ مطلوبہ نتایج نہیں حاصل کر سکیں گے۔
۴۔ جب اِس سیمنٹ سے مصالحہ اور کنکریٹ تیار کِیا جائے تو اِس میں پانی مِلانے کے بعد تین گھنٹے کے اندر استعمال کریں تو یہ بہترین نتایج دیں گے۔
۵۔ سیمنٹ کی ترائی کم از کم سات دِن تک کریں۔ کوشش یہ ہونی چاہیے کہ سات دِن کے اندر کبھی سیمنٹ کے استعمال کی جگہ خشک نہ ہو۔
۶۔ سیمنٹ سٹور کرتے وقت نمی اور پانی کا خاص خیال رکھنا۔ گیلی اور نمدار جگہ پر سیمنٹ کی بوریاں نہ رکھیں۔
۷۔ دس بوریاں اوپر تلے رکھیں اِس سے زیادہ نہ رکھیں۔ ورنہ نِچلی بوری خراب ہو جائے گی۔
۸۔ نیز سیمنٹ کو لکڑی یا پلاسٹک کی Sheet پر رکھیں اور سیمنٹ مکمل طور پر ڈھانپ کر رکھیں تو ایسے سیمنٹ کو آپ تین ماہ تک استعمال کر سکتے ہیں(ّ بہتر یہی ہے کہ آپ کم سے کم وقت میں استعمال کریں)
۹۔ اگر کبھی نمی کی وجہسے سیمنٹ میں روڑئے بن جاتے ہیں اگر یہ روڑئے ہاتھ کے ملنے سے ٹوٹ جائیں تو اِس سیمنٹ کو استعمال کرنے میں کوئی حرج نہیں اور اگر یہ روڑئے ہاتھ کے مَلنے سے نہ ٹوٹیں تو ایسا سیمنٹ نہیں استعمال کرنا چاہیے۔

حفاظتی ہدایات

سیمنٹ ایک کھپری (Corrosive) چیز ہے اِس کو استعمال کرتے وقت احتیاط کرنی چاہیے۔ دستانے پہن کر سیمنٹ مِلانا چاہیے اور خاص کر ہاتھ پر زخم نہیں ہونا چاہیے اگر ہو تو اِس کی ٹھیک ٹھاک پٹی ہونی چاہیے ورنہ یہ ہاتھ اور زخم کو خراب کر دے گا۔
سیمنٹ کی دھول سے بچنا چا ہیے اور استعمال کرتے وقت DUST MASK استعمال کرنا چاہیے۔ اگر DUST MASK مہیا نہیں ہیں تو مُنہ اور ناک کو صاف کپڑے سے ڈھانپ لینا چاہیے۔گے۔