فوجی فاؤنڈیشن

فوجی فاؤنڈیشن سابق فوجیوں اور ان کے لواحقین کی فلاح و بہبود کے لئے قائم کیا گیا ایک وقف ادارہ ہے جس کا قیام خیراتی وقف ایکٹ ۱۸۹۰ کے تحت عمل پذیر ہوا۔ اس کے اغراض و مقاصد اور تنظیمی ڈھانچہ حکومتِ پاکستان کے تجویز کردہ انتظامی منصوبے میں بیان کئے گئے ہیں۔ اگرچہ اس کا موجودہ نام ۱۹۶۷ سے مستعمل ہے تاہم فاؤنڈیشن کا نکتہِ آغاز۱۹۴۲ میں بھارت میں حکومت برطانیہ کے قائم کردہ ملٹری ریکنسٹرکشن فنڈ میں تھا ( جو بعد ازاں پوسٹ وار سروسز ریکنسٹرکشن فنڈ کے طور پر جانا گیا)۔ اس کے بنیادی مقاصد میں سابقہ فوجیوں اور ان کے لواحقین کی بعد از جنگ فلاح و بہبود اور بحالی شامل تھے۔
اس وقت فاؤنڈیشن کی خدمات سے مستفید ہونے والوں کی تعداد ۹۶ لاکھ کے قریب ہے جو کہ ملکی آبادی کا تقریباً ۷ فیصد ہے۔ فوجی فاؤنڈیشن تعلیم، صحت، تکنیکی اور پیشہ ورانہ تربیت کے شعبوں میں خدمات فراہم کرتی ہے۔
فاؤنڈیشن کا بنیادی مقصدِ حیات اس کی خدمات سے استفادہ کنندگان کی بمطابق قانون فلاح و بہبود ہے۔ ایسے افراد کی بڑھتی ہوئی تعداد کی فلاح و بہبود کے لئے درکار سرمائے کی مستقل بنیادوں پر فراہمی کی خاطر مضبوط تجارتی سرگرمیاں لازم ہیں۔ یوں عمومی طور پر فوجی گروپ کے اجتماعی نام سے پہچانی جانے والی فوجی فاؤنڈیشن کے اثاثہ جات میں متعدد صنعتی اور تجارتی ادارے شامل ہیں جن میں نصف مکمل طور پر فاؤنڈیشن کی ملکیت ہیں جبکہ دیگر میں بھاری سرمایہ کاری اور شراکت داری کی بنا پر ان اداروں کے بورڈ میں فاؤنڈیشن اکثریتی اختیارات کی حامل ہے۔فاؤنڈیشن جن صنعتی شعبوں میں سرمایہ کاری کر چکی ہے ان میں کھاد، توانائی، تیل اور گیس کی تلاش اور تقسیم، تیل ٹرمینل کا انتظام و انصرام، مالیاتی خدمات، سیمنٹ، چینی، اناج، روزگار اور سیکیورٹی خدمات شامل ہیں۔

ان تمام تجارتی اور فلاحی سرگرمیوں کی شروعات معمولی تھیں۔ ۱۹۵۴ میں پوسٹ وار سروسز ریکنسٹرکشن فنڈ کے ایک مرکزی اکائی کے طور پر ارتکاز کے موقع پر ۱۹۴۷ میں سابقہ مغربی پاکستان کے حصّے سے ملنے والے ۵ء۳ کروڑ روپے میں فنڈ کے پاس صرف ۸ء۱ کروڑ روپے دستیاب تھے۔ دانشمندانہ سرمایہ کاری کی بنا پر وسیع اور بڑھتی ہوئی آبادی کے ایک بڑے حصّے کو سماجی اور فلاحی سہولیات کی فراہمی میں روز افزوں ترقی یقینی طور پر ایک قابلِ رشک اور قابلِ بیان داستان ہے۔ چونکہ فاؤنڈیشن کسی قسم کے عطیات قبول نہیں کرتی اس لئے صرف محتاط سرمایہ کاری ہی اس کی آمدن میں اضافے کا واحد ذریعہ ہے۔ فاؤنڈیشن کی پچاس سالہ تاریخ اس امر کی گواہ ہے کہ فاؤنڈیشن اپنے ہی پیدا کردہ وسائل سے ملک بھر میں اپنی بڑھتی ہوئی فلاحی ذمّہ داریوں سے عہدہ برآ ہوتی ہے۔ فوجی فاؤنڈیشن کی سرگرمیوں کی ساخت اسے ایک منفرد فلاحی اور کاروباری گروپ کے طور پر ممتاز کرتی ہے۔

ہم کماتے ہیں، لیکن صرف خدمت کے لئے۔

مزید معلومات کے لئے فوجی فائونڈیشن کی ویب سائٹ ملاحظہ کریں