بورڈ آف ڈائریکٹرز

چیئرمین (لیفٹیننٹ جنرل سید طارق ندیم گیلانی، ستارہ ِ ہلالِ امتیاز (ملٹری) (ریٹائرڈ
چیف ایگزیکٹو / منیجنگ ڈائریکٹر (لیفٹننٹ جنرل محمد احسن محمود، ہلالِ امتیاز (ملٹری) (ریٹائرڈ
نان ایگزیکٹو ڈائریکٹر میجر جنر ل نصیر علی خان،ہلال امتیاز(ملٹری)(ریٹائرڈ)
نان ایگزیکٹو ڈائریکٹر میجر جنر ل عابد رفیق ،ہلال  امتیاز(ملٹری)(ریٹائرڈ)
نان ایگزیکٹو ڈائریکٹر مسٹر ریحان لائق
نان ایگزیکٹو ڈائریکٹر (میجر جنرل وسیم صادق، ہلالِ امتیاز (ملٹری) (ریٹائرڈ
نان ایگزیکٹو ڈائریکٹر   سيد اقتدارسعید
انڈیپنڈہٹ ڈائریکٹر جاوید اقبال
انڈیپنڈہٹ ڈائریکٹر مسٹر ظفر اقبال سوبانی
انڈیپنڈہٹ ڈائریکٹر محترمہ جهان ارا سجاد احمد
ہیومن ریسورس کمیٹی
چیئرمین مسٹر ظفر اقبال سوبانی
رکن میجر جنر ل عابد رفیق ،ہلال  امتیاز(ملٹری)(ریٹائرڈ)
رکن جاوید اقبال
رکن (میجر جنرل وسیم صادق، ہلالِ امتیاز (ملٹری) (ریٹائرڈ
سیکرٹری (بر یگیڈئر ریاض احمد گوندل،ستارہ امتیاز(ملٹری)(ریٹائرڈ
آڈٹ کمیٹی
چیئرمین محترمہ جهان ارا سجاد احمد
رکن مسٹر ریحان لائق
رکن (میجر جنرل وسیم صادق، ہلالِ امتیاز (ملٹری) (ریٹائرڈ
رکن جاوید اقبال
سیکرٹری (بر یگیڈئر ریاض احمد گوندل،ستارہ امتیاز (ملٹری)(ریٹائرڈ
تکنیکی کمیٹی
صدر سيد اقتدارسعید
رکن مسٹر ریحان لائق
سیکرٹری مسٹر محمد طارق (سینئر جنرل منیجر پلانٹ)
انویسٹمنٹ کمیٹی
صدر مسٹر ریحان لائق
رکن سيد اقتدارسعید
رکن مسٹر ظفر اقبال سوبانی
رکن جاوید اقبال
سیکرٹری (بر یگیڈئر ریاض احمد گوندل،ستارہ امتیاز (ملٹری)(ریٹائرڈ

(لیفٹیننٹ جنرل سید طارق ندیم گیلانی، ستارہ ِ ہلالِ امتیاز (ملٹری) (ریٹائرڈ

لیفٹیننٹ جنرل سید طارق ندیم گیلانی نے 26 اکتوبر1979 پاک فوج میں صدارتی گولڈ میڈل کے ساتھ کمیشن حاصل کیا۔جنرل افسر نے مختلف کمانڈ ،سٹاف اور تدریسی فرائض سر انجام دیے۔ آپ نے سروس کے ابتدائی ایام میں1983 سے 1985 تک سعودی عرب کی مسلح افواج میں عارضی خدمات سر انجام دیں۔آپ نے یو ایس آرمی آرٹلری اسکول "فورٹ سل اوکلاہوما "کمانڈ اور سٹاف کالج کیمبرلی (برطانیہ) ،آرمرڈ فورسز وار کالج (نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی ) اسلام آباد اور یو ایس آرمی وار کالج ،کارلیلی بیریکس،پنسلوانیاسے گریجویشن کی ڈگری حاصل کی۔آپ نے قائد اعظم یونیورسٹی اسلام آباد سے وار اسٹڈیز اور امریکی آرمی وار کالج سے اسٹریٹجک اسٹڈیزمیں ماسٹر ڈگری حاصل کی۔
دوران سروس آپ نے بریگیڈ، ڈویثرن اور کور کی کمانڈ کی ۔ آپ بحثیت کمانڈنٹ آرمڈ فورسز وار کالج، نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی، اسلام آباد تعینات رہے اورچیف آف لاجسٹک سٹاف جنرل ہیڈ کوارٹر میں بھی خدمات سر انجام دیں ۔ مثالی کارکردگی پرآپ کو ہلال امتیاز (ملٹری) سے نوازا گیا۔آپ اکتوبر2015 ؁ء میں پاکستان آرمی سے ریٹائرہوئے۔اور 10 جنوری 2018 ؁ء بحثیت منیجنگ ڈائریکٹر فوجی فاؤنڈیشن تعینات ہوئے ۔ آپ مندرجہ ذیل ادروں کے بورڈ کے چیئرمین اور ڈائریکٹر ہیں:۔

۔ فوجی فر ٹیلائزز بن قاسم لمیٹڈ
۔ فوجی فر ٹیلائزز کمپنی لمیٹڈ
۔ ماڑی پیٹرویم کمپنی لمیٹڈ
۔ فوجی سیمنٹ کمپنی لمیٹڈ
۔ عسکری سیمنٹ لمیٹڈ
۔ عسکری بینک لمیٹڈ
۔ فوجی کبیر والا پاور کمپنی لمیٹڈ
۔ فوجی آئل ٹرمینل اینڈ ڈسٹری بیوشن کمپنی لمیٹڈ
۔ فوجی ٹرانس ٹرمینل لمیٹڈ
۔ فاؤنڈیشن پاور کمپنی (ڈہرکی) لمیٹڈ
۔ ڈہرکی پاور ہولڈنگ لمیٹڈ
۔ فوجی فر ٹیلائزز انرجی لمیٹڈ
۔ فاؤنڈیشن ونڈ انرجی۔1 لمیٹڈ
۔ فاؤنڈیشن ونڈ انرجی۔2 (پرائیویٹ) لمیٹڈ
۔ فوجی اکبر پورشیامیرین ٹرمینلز (پرائیویٹ ) لمیٹڈ
۔ فوجی میٹ لمیٹڈ
۔ فوجی فوڈز لمیٹڈ
۔ ایف ایف بی ایل فوڈز لمیٹڈ
۔ ایف ایف بی ایل پاور کمپنی لمیٹڈ
۔ فوجی فریش اینڈ فریز لمیٹڈ
۔ فوجی انفراویسٹ فوڈ لمیٹڈ

لیفٹینٹ جنرل محمد احسن محمود،ہلال امتیاز( ملٹری) (ریٹائرڈ)
چیف ایگزیکٹو ،منیجنگ ڈائریکٹر،فوجی سیمنٹ کمپنی لمیٹڈ

لیفٹینٹ جنرل محمد احسن محمود،ہلال امتیاز( ملٹری) (ریٹائرڈ) ۲۴ فروری۲۰۱۷ کو فوجی سیمنٹ کمپنی لمیٹڈ کے چیف ایگزیکٹو/ منیجنگ ڈائریکٹر تعینات ہوئے۔آپ نے ۱۹۷۶ میں پاکستان آرمی کی انجینئرنگ کور میں کمیشن حاصل کیا۔ نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اسلام آباد سے پوسٹ گریجو یشن کی ڈگری اور Cranfield انسٹیوٹ آف ٹیکنالوجی بر طانیہ سے ڈیفنس ٹیکنالوجی میں ماسٹر ڈگری حاصل کی۔

آپ نے دوران سروس مختلف کمانڈ،سٹاف اور تدریسی فرائض سر انجام دےئے۔ آپ کمانڈ اینڈ سٹاف کالج کوئٹہ اور نیشنل ڈیفنس یوینورسٹی اسلام آباد کے تدریسی شعبوں سے منسلک رہے ۔جنرل ہیڈ کوارٹرز راولپنڈی میں بطور ڈائریکٹر جنرل ویپن اینڈایکوپمنٹ کے فرائض سر انجام دینے کے علاوہ بطور جنرل آفیسر کمانڈنگ انفینٹری ڈویژن بھی تعینات رہے۔

لیفٹینٹ جنرل کے عہدہ پر ترقی کے بعد آپ انجینئر انچیف پاکستان آرمی تعینات ہوئے اور اس کے بعد عرصہ ساڑھے تین سال کیلئے پاکستان آرڈننس فیکٹریز واہ کینٹ میں بطور چےئرمین اپنے فرائض منصبی ادا کئے۔ آپ کی اعلی خدمات اور مثالی کارکردگی کو سراہتے ہوئے حکومت پاکستان نے آپ کو ہلال امتیاز (ملٹری )سے نوازا ۔ آپ نے پاکستان فوج میں عرصہ چالیس سال تک انتہائی کامیابی سے اپنے پیشہ وارانہ امور سر انجام دےئے اور ۲۰۱۶ میں ریٹائر ہوئے۔

جناب ریحان لئیق
ایڈیشنل ڈائریکٹر فنانس - فوجی فائونڈیشن

جناب ریحان لئیق اکتوبر 2018 میں ایڈیشنل ڈائریکٹر فنانس کی حیثیت سے فوجی فائونڈیشن سے وابستہ ہوئے۔وہ ایک مستند چارٹرڈ اکائونٹینٹ (FCA) ہیں جو تجارتی منصوبہ بندی ، نتائج کی فراہمی، انفراسٹرکچر اور حصول اثاثہ جات کی تنظیمی صلاحیت کو فروغ دینے کا بائیس سالہ مسلّمہ تجربہ رکھتے ہیں۔
جناب ریحان لئیق نے اپنے پیشہ ورانہ سفر کا آغاز پرائس واٹرہائوس کوآپرز کے ساتھ 1989 میں کیا اور میسرز موبلنک، میسرز شلمبرگر اور او جی ڈی سی ایل کے ساتھ ایگزیکٹو ڈائریکٹر (فنانس) کے طور پر منسلک رہے۔ وہ اپنے پیشہ ورانہ سفر میں شلمبرگر کے ساتھ مشرق وسطیٰ، ایشیا، روس اور شمالی امریکہ متعدد ممالک میں اعلیٰ عہدوں پر مالیاتی انتظام کار کے وسیع بین الاقوامی تجربے کے حامل ہیں۔
وہ پالیسی پر عمل درآمد، انتظامِ کار کی رپورٹ سازی، داخلی اور بیرونی تبدیل کاری (مثلاً کاروبار کے لیے وسائل کا ممکنہ حد تک استعمال) اور منافع کی زیادہ سے زیادہ حد کو یقینی بنانے کے لیے تجزیاتی کاروباری معاونت کا کثیرجہتی تجربہ رکھتے ہیں۔

(میجر جنرل وسیم صادق ، ہلالِ امتیاز (ملٹری) (ریٹائرڈ

میجرجنرل وسیم صادق (ریٹائرڈ)،ہلال امتیاز( ملٹری 6(جون2017ء ؁کو فوجی سیمنٹ کمپنی لمیٹڈکے ڈائریکٹر تعینات ہوئے۔ آپ نے 1979ء ؁ میں پاکستان آرمی کی بلوچ رجمنٹ میں کمیشن حاصل کیا۔ نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اسلام آباد سے پوسٹ گریجو یشن کی ڈگری اور وار اکیڈمی ترکی سے وار سٹڈیز میں ماسٹر ڈگری حاصل کی۔
آپ نے دوران سروس مختلف کمانڈ،سٹاف اور تدریسی فرائض سر انجام دےئے۔ جنرل ہیڈ کوارٹرز راولپنڈی میں بطور وائس چیف آف لاجسٹک سٹاف کے فرائض سر انجام دینے کے علاوہ آپ کو یہ اعزازبھی حاصل ہے کہ بطور جنرل آفیسر کمانڈنگ پاکستان آرمی اسٹرائیک ڈویژن تعینات رہے۔
آپ کی اعلی خدمات اور مثالی کارکردگی کو سراہتے ہوئے حکومت پاکستان نے آپ کو ہلال امتیاز (ملٹری )سے نوازا ۔ آپ نے پاکستان فوج میں عرصہ 36 سال تک انتہائی کامیابی سے اپنے پیشہ وارانہ امور سر انجام دےئے اور 2015 ؁ء میں ریٹائر ہوئے۔

 

جناب جاوید اقبال ، ایک اعلیٰ تعلیم یافتہ، متحرک، پر جوش اور پر اعتمادنوجوان ہیں جو نت نئے کاروباری اور انتظامی چیلنجوں کا سامنا کرنے کے لئے تیار رہتے ہیں۔ان کی اعلیٰ کارکردگی کے شعبوںمیں سینئیر لیول منیجمنٹ آپریشنز، مالیاتی منصوبہ بندی (تخمینہ سازی اور جائزہ)، سٹرٹیجک مالیاتی کارروائیاں، مارکیٹنگ طریقہ ِکار، مصنوعات کی قیمت کا تعین ، تجارت، ہیومن ریسورسز انتظام و انصرام،بین الاقوامی اقتصادی ڈھانچہ، تحصیل، راہنمائی کردار، روابط، انفارمیشن ٹیکنالوجی کا نفاذ، آئی ایس او9002 کا نفاذ، سوُت کی فروخت، نئے سپننگ یونٹ کا قیام، سپننگ اور ویوینگ کے لئے مشینری کا انتخاب وغیرہ شامل ہیں۔

جناب ظفر اقبال سوبانی
آزاد/ خودمختار ڈائریکٹر ایف سی سی ایل

ظفر اقبال سوبانی پیداوار، توانائی اور آڈٹ کے شعبوں میں پاکستان اور مشرقِ وسطیٰ کے ممالک میں کام کرنے کا چالیس سالہ تجربہ رکھتے ہیں۔ آج کل وہ مالیات، تجارت اور توانائی کے شعبوں میں مشیر کے طور پر کام کر رہے ہیں اور اس کے ساتھ ایک کاروباری منتظم بھی ہیں۔وہ 2014 سے نج کاری کمیشن کے بورڈ ممبرکے طور پر خدمات سر انجام دے رہے ہیں اور انھوں نے اس دورانیے میں طے پانے والے نج کاری کے معاملات میں فعال کردار ادا کیا ہے جس میں PSE اور توانائی کے شعبے میں کیا جانے والا بنیادی نوعیت کا کام شامل ہے۔مزید برآںوہ جن اداروں کے بورڈ کے ممبر ہیں ان میں ٹی آر جی (پاکستان) لمیٹڈ، پرائمس لیزنگ لمیٹڈ جو برونی انویسٹمنٹ کمپنی کا ذیلی ادارہ ہے، آئی ٹی مائنڈز جو سینٹرل ڈیپازیٹری کمپنی اے جی پی پاکستان لمیٹڈ کا ذیلی ادارہ ہے، اور ہارڈن سولر جو سولر سہولیات کے تیار کنندہ ہیں، شامل ہیں۔ وہ ICAP کی آڈٹ کمیٹی کے چیئرمین بھی ہیں۔
اپنے پیشہ ورانہ سفر میں انھوں نے ہائوس آف حبیب کے ساتھ 2013 سے 2015 کے درمیان دو سال کے لیے نیو پراجیکٹ ڈویلپمنٹ اور ریئل اسٹیٹ مینجمنٹ کے شعبوں میں کام کیا۔ وہ توانائی کے شعبے کی ملک بھر کی صنعت کا بھرپور تعارف رکھتے ہیں اور تمام اہم متعلقہ افراد اور اداروں سے ان کے مستحکم تعلقات ہیں۔ ملک کے توانائی کے شعبے کے اداروں کی سربراہی بھی ان کے تجربے کا حصہ ہے جن میں وہ حبکو پاکستان کے 2011 اور 2013 کے درمیان IPP پر مبنی توانائی کے تین منصوبوں پر CEOاور لبرٹی پاور ٹیک کے 200میگاواٹ کے IPP پر مبنی منصوبے کے CEO رہے۔
ان کی پیشہ ورانہ زندگی کا بڑا حصہ لیکسن گروپ کے ایک حصے سینچری پیپر اینڈ بورڈ کے ساتھ گزرا جس میں 1990 اور 2008 کے درمیان انھوں نے مالیات، بڑے حجم کے منصوبوں کے مالیاتی معاملات، اخراجات اور ترسیلات کے منتظم کی حیثیت سے کام کیا۔ اس کے علاوہ گروپ کے شعبہ مالیات کے درمیان مجموعی رابطہ کاری کی ذمہ داری بھی انھی کے پاس تھی۔انھوں نے پاکستان آکسیجن لمیٹڈ کے ساتھ 1985 سے 1990 کے دوران مرکزی مالیاتی معاملات میں کام کیا۔
وہ انسٹی ٹیوٹ آف چارٹرڈ اکائونٹینٹس آف پاکستان (ICAP) کے صدر رہے اور کونسل اور ریجنل کمیٹی میں مختلف حیثیتوں سے فعال خدمات سرانجام دیں۔وہ نَو سال تک کوالٹی کنٹرول بورڈ کے چیئرمین بھی رہے جہاں انھیں پاکستان میں آڈٹ کے کام کے معیار کی مجموعی نگرانی کی ذمہ داری سونپی گئی۔وہ اوورسیز انویسٹرز چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی انتظامی کمیٹیوں کے ممبر بھی رہے۔ وہ 2004 اور 2005 میں پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف کارپوریٹ گورننس کے سپانسر ڈائریکٹر رہے اور IFC کی طرف سے کارپوریٹ گورننس کے تربیت کار کے طور پر سندیافتہ ہیں۔
انھوں نے 1980 کی دہائی کے ابتدائی برسوں میں چارٹرڈ اکائونٹینسی اور کاسٹ اینڈ مینجمنٹ اکائونٹیسی کی تعلیم پاکستان سے حاصل کی۔ انھوں نے پاکستان میں اے ایف فرگوسن (PWC) کے ساتھ اور سعودی عرب میں ارنسٹ اینڈ یونگ کے ساتھ کام کیا۔

پرویز انعام
چیف ایگزیکیٹو

مڈ ایسٹ پرائیویٹ لمیٹڈ کراچی
یونائیٹد برادرزپرائیویٹ لمیٹڈ کراچی

ڈائریکٹر

فوجی سیمنٹ کمپنی لمیٹڈ
یونی بروانڈسٹریز لیمیٹڈ کراچی
یونی برو گارمنٹس پرائیویٹ لمیٹڈ کراچی
یونی برو ٹیکسٹائل ملز لمیٹڈ کراچی
پاک گلف لیزنگ کمپنی لمیٹڈ کراچی

 

جناب پرویز انعام نے لارنس کالج گھوڑا گلی سے انٹر میڈیٹ اور جامعہ سندھ، جامشورو (حیدرآباد) سے گریجویشن کی۔وہ یورپ، برطانیہ، امریکہ، کینیڈا، آسٹریلیا، نیوزی لینڈ، روس، مشرق وسطیٰ اور مشرق بعید میں سفر کر چکے ہیں۔